donateplease
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
mazameen
Share on Facebook
 
Literary Articles -->> Ghazal Numa
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
Author : Nazeer Fatahpuri
Title :
   Matlaband Ghazal Numa

مطلع بندغزل نما
 
نذیرفتح پوری، پونہ
 
زیست کی اجڑی تصویرمیں ایک دن اپنے جذبات کارنگ بھرجائیںگے
ہم مصورہیں یہ کام کرجائیںگے
بادلوں کاتصورسجا کر کبھی، پاس کی رہ گزرسے گزرجائیںگے
زندگی تیرے کوزے میں بھرجائیںگے
ختم سانسوں کاہوجائے گا جب سفر، موت آجائے گی اور مرجائیںگے
وقت کی پالکی سے اتر جائیںگے
جن کاکردارمٹی کے تودوں ساہے اپنی ضربوں سے خودہی بکھرجائیںگے
اورہوائوں پہ الزام دھرجائیںگے
جن کے چہروں پہ داغوں کی یلغارہے آئینوں سے وہی لوگ ڈرجائیںگے
منہ چھپاکربچارے گزرجائیںگے
فاعلن فاعلن فاعلن کے عوض ،فن میں دل کالہو جو بھی بھرجائیںگے
شاعری میں بڑاکام کرجائیںگے
زردموسم کی پرچھائیوں کے سبب پھول مرجھائیں گے اور بکھرجائیں گے
سارے منظر کو بے رنگ کرجائیںگے
 
+++++
 
مطلع بندغزل نما
 
ارمغان ساحل ،سہسرام
 
تیراآنچل برسے بادل
دل پرجل تھل
گورا مکھڑا، آنکھیںچنچل
دل میںہلچل
خنجرتیری آنکھ کاکاجل
دل ہے گھائل!
ڈھونڈوںاس کوجنگل جنگل
ساتھی اوجھل
اس کی گلی سے ساحل اب چل!
دل ہے بوجھل
++++
 

 

Comments


Login

You are Visitor Number : 406