donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* ہوگا جو ذ کر حضرت شبّیر دیر تک *
  "سید اقبال رضوی "شارب

  سلام بہ  حضور  امام عالی  مقام

ہوگا    جو  ذ کر  حضرت  شبّیر دیر تک
قرآں  کی  ہوتی  جائے گی  تفسیر دیر تک  

اہل   کسا   کے فضل پہ  حیرت نہ کیجیے 
پڑھئے حضور  آیت  تطہیردیر تک
 
 بولے  حبیب  سن پہ  ہمارے  نہ جائیو 
چمکیگی  آج ہاتھ  میں شمشیردیر تک 

کیا صبر  تھا  کہ  حرف  شکایت نہ  لب  پہ  تھا 
تڑپا کیا  جو ہاتھوں  پہ  بے شیر  دیر  تک 

بھائی  کا لکّھا  بازؤ    قاسم  پہ  جب ملا 
شبّیر  چومتے  رہے  تحریر دیر تک 

شہداء کے  لاشے  بے سرو سامان  دیکھ کر 
عابد  کے  ساتھ  روئی  ہے زنجیر  دیر  تک  

شارب  بہ  فضل  مولا  یہ  اشعار  ہو گئے 
 کرنی  پڑی  نہ کچھ تجھے  تدبیر  دیر  تک 
****
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 565