donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* اہل_ ثروت کو محلات بنانے کی ہے فکر *

 

غزل

از ڈاکٹر جاوید جمیل

 

اہل_ ثروت کو محلات بنانے کی ہے فکر

ہم غریبوں کو فقط جسم چھپانے کی ہے فکر

 

کون کرتا ہے نگہداشت کسی کی لوگو 

جس کو دیکھو اسے اپنے کو بچانے کی ہے فکر

 

ہم جدائی کے تصور سے بھی کانپ اٹھتے ہیں

آپ کو ہم سے فقط پیچھا چھڑانے کی  ہے فکر

 

آپ ہر روزلگاتے ہیں پلستر اس پر  

ہم کو یہ بیچ کی دیوار گرانے کی ہے فکر

    

یا تو "دیوانہ" ہے تو یا تجھے "توفیق" ہوئی؟

اپنی پروا نہیں جاوید! زمانے کی ہے فکر

*****************
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 496