donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* حسین خواب کے منظر! مری حیات میں آ *
غزل
 
از ڈاکٹر جاوید جمیل
 
 حسین خواب کے منظر! مری حیات میں آ
کسی وجود میں ڈھل کر مری حیات میں آ
 
اب اور ہوتا نہیں انتظار اے محبوب 
سنبھال بوریہ بستر، مری حیات میں آ
 
ہے ایک شکل کہ رہ اپنی ہی حیات میں قید
ہے ایک صورت_ دیگر، مری حیات میں آ
 
ستم ہی ڈھانا ہے مقصد تو ڈھا قریب آ کر
مرے عزیز ستمگر! مری حیات میں آ  
 
رہا ہے شہر فدا تجھ پہ ایک عرصہ سے 
اب اے جمال کے پیکر! مری حیات میں آ
 
خوشی! تو آئی تو عادت بدل بھی سکتی ہے 
ابھی غموں کا ہوں خوگر، مری حیات میں آ
  
سکوت! رہتا ہے کیوں بحر کی تہوں میں، بتا
کبھی بہ صورت_ گوہر مری حیات میں آ
 
میں پھر زمانہ میں آب_ حیات بانٹوں گا
یقیں کے پاک  سمندر! مری حیات میں آ 
 
مرا نفاق ہی جاوید میرا دشمن ہے
اب اے خلوص کے جوہر! مری حیات میں آ
۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸
 
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 458