donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* الفت میں بھول جائیں وہ لیل و نہار ک&# *

غزل


جاوید جمیل

الفت میں بھول  جائیں وہ لیل و نہار کاش 
طاری اسی طرح رہے ان پر خمار کاش 

محبوب کی شرارتیں محبوب ہیں مگر 
معصومیت کا جز بھی رہے برقرار کاش 

آتا ہے جیسے پیار مجھے ان پہ بار بار 
ایسے ہی مجھ پہ آنے لگے انکو پیار کاش

آؤں کبھی میں پہلے، کبھی پہلے آئیں وہ 
دونوں پہ گزرے کیفیت_انتظار کاش 

آئے کبھی خزاں تو ذرا دیر کے لئے 
اور جھٹ سے لوٹ آئے پلٹ کر بہار کاش 

آتی ہیں بدگمانیاں جانے کے ہی لئے 
لوٹ آئے آپسی وہی پھر اعتبار کاش 

نیت وہی ہو دل کی جو ہونٹوں پہ بات ہے 
نکلے نہ انکی بات فقط اشتہار کاش 

ہو جائے انکی جان پہ کاش آج دل سوار 
جذبات پر رہے نہ انھیں اختیار کاش 

مقصد پتہ نہیں جنھیں ملتا انہیں کو ہے 
جن کو خبر ہے انکو ملے اقتدار کاش 

جاوید رنگ اور  ترا, انکا رنگ اور 
رنگوں کا امتزاج رہے برقرار کاش


۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸

 

 
Comments


Login

You are Visitor Number : 426