donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* تیری بڑھی کسی سے اگر آشنائی تو؟ *

غزل


از ڈاکٹر جاوید جمیل
 
تیری بڑھی کسی سے اگر آشنائی تو؟ 
کی تو نے مجھ سے بھول کے بھی بے وفائی تو؟

رہتا ہے سامنے ترے پیکر خلوص کا 
تصویر پھر بھی دل میں کسی کی بسائی تو؟

ہم نے ترے دفاع میں خود کو کیا نثار 
ہونے لگی ہماری کسی سے لڑائی تو؟

الزام کا لگانا تو آسان ہے بہت 
ثابت اگر ہماری ہوئی بے خطائی تو؟

ہم تو پھنسے ہیں تیری محبّت کے جال میں 
تو نے تھما دی اور کسی کو کلائی تو؟

تو میری بندگی پہ اٹھاتا رہا سوال 
گھیرے میں ہو سوالوں کے تیری خدائی تو؟

جاوید قصہ سن کے ترا آنکھیں نم ہوئیں 
گزری جو مجھ پہ میں نے اگر وہ سنائی تو؟

************

 
Comments


Login

You are Visitor Number : 572