donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* زنگی کیا ہے فقط پیچیدگی بےسود سی *

غزل 


ڈاکٹر جاوید جمیل
 
زنگی کیا ہے فقط پیچیدگی بےسود سی 
ہر قدم ہر لمحہ اک بیچارگی بے سود سی 

تو اگر مل جائے تو ہو جائے شاید سودمند 
ورنہ ہے فالحال یہ دیوانگی بےسود سی
 
حسن کے جلوے دکھا، ناز و ادا شامل رہے 
آجکل لگنے لگی ہے سادگی بےسود سی 

خواہشیں اور حسرتیں پوری نہ ہونگی جو کبھی 
ہے محبت اور کیا بس تشنگی بےسود سی

دردمندی ہے دلوں میں تو زمیں پر روشنی 
اور نہیں ہے تو ہر اک سو تیرگی بے سود سی  

لاکھ روکا پھر بھی ہوتی ہی رہیں گستاخیاں 
لگ رہی ہے عمر بھر کی بندگی بےسود سی 

چند بے ہنگم خیال اور چند پیچ افکار کے 
شاعری جاوید ہے وارفتگی بےسود سی

۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸

 
Comments


Login

You are Visitor Number : 444