donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* یہ ارادہ تھا امنگوں میں رہونگا اس  *

غزل


از ڈاکٹر جاوید جمیل
 
یہ ارادہ تھا امنگوں میں رہونگا اس کی
صبحوں میں، شاموں میں، راتوں میں رہونگا اس کی
 
میرے مرجھاتے ہی پھینکے گا، نہیں تھا معلوم
میں سمجھتا تھا کہ زلفوں میں رہونگا اس کی
 
ہاتھوں کو کاٹ کے تو پھینک نہیں سکتا ہے
میں بھی ہاتھوں کی لکیروں میں رہونگا اسکی
 
اور کب تک نظر انداز کریگی دنیا
لاکھ کھٹکوں مگرآنکھوں میں رہونگا اس کی
 
مجھ کو جاوید بھروسہ ہے فقط الله پر
لاکھ دشمن ہوں، پناہوں میں رہونگا اس کی
۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸

 

 
Comments


Login

You are Visitor Number : 517