donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* کیا دور سے ہی محبّت کا جادو *
غزل
از ڈاکٹر جاوید جمیل
 
کیا دور سے ہی محبّت کا جادو 
دکھا آکے چپکے سے قربت کا جادو  
 
نزاکت کا جادو، نفاست کا جادو
غضب کا ہے تیری رفاقت کا جادو
 
سمندر کی رونق نظر آ رہی ہے
ہے آنکھوں میں تیری قیامت کا جادو
 
نظر آتے ہی دم بخود ہو گیا ہوں
ہے قاتل بڑا تیری صورت کا جددو
 
ادائیں دکھانے لگا دیکھ میں بھی  
ہوا مجھ پہ بھی تیری چاہت کا جادو
 
بدن میں مرے جیسے بجلی لگی ہو
ترے لمس میں ہے حقیقت کا جادو
 
مرے جسم و جاں میں ہے نشہ سا چھایا
ہے یہ عاشقانہ طبیعت کا جادو
 
بہت دیکھا جادو ہے صورت  کا انکی
دکھا ئیں  وہ اب کاش سیرت کا جادو
 
رچاؤ نہ نفرت کی سازش جہاں میں
چلاؤ ہر اک سو اخوت کا جادو  
 
ہے انساں میں شیطان بھی جانور  بھی
دکھائے کوئی آدمیت کا جادو
 
وہ سائل کو ٹھوکر لگانے لگا ہے
کہ سر چڑھ کے بولا ہے دولت کا جادو
 
جواں بوڑھے بچے سبھی نشہ میں ہیں
کہ افیون ہے عیش و عشرت کا جادو
 
شرارت کا جادو کہاں دیرپا ہے
چلا ہے، چلیگا شرافت کا جادو
 
خموشی ہے جاوید محفل پہ طاری
چلا خوب تیری خطابت کا جادو  
Kiya  door se hi muHabbat ka jadoo
Dikha aake chupke se qurbat ka jadoo
 
Nazakat ka jadoo, nafasat ka jadoo
GHazab ka hai teri rafaqat ka jadoo
 
Samandar ki raunaq nazar aa rahi hai
Hai aankhoN meiN teri qayamat ka jadoo
 
Nazar aate hi fam baKHud ho gaya hooN
Hai qatil baRa teri soorat ka jadoo
 
Adaeyn dikhane laga dekh main bhi
Hua mujh pe bhi teri chahat ka jadoo
 
Mere jism o jaaN meiN hai nashsha sa CHHaya
Hai yeh aashiqana  tabeeAt ka jadoo
 
Badan meiN mere jaise bijli lagi ho
Tere lams meiN hai Haqiqat ka jadoo
 
Bahut dekha jaadoo hai soorat ka unki
dikhaeyN wo ab kaash seerat ka jadoo
 
rachao na nafrat ki saazish jahaN meiN
chalao har ek soo aKHuwwat ka jadoo
 
hai insaaN meiN shaitaan bhi jaanwar bhi
dikhaaye koi aadmiyyat ka jadoo
 
wi sail ko THokar lagane laga hai
ke sar chaRH ke bola hai daulat ka jadoo
 
jawaaN bachche booRHe sabhi nashshe meiN hain
ke afyoon hai aish o ishrat ka jadoo
 
shararat ka jadoo kahan derpa hai
chala hai chalega sharafat ka jadoo
 
Khamoshi hai javed maHfil pe taari
Chala KHoob teri KHitabat ka jadoo
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 546