donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* ہے یہ بہتر کہ اکیلے ہمیں رہ جانے دو *
غزل
از ڈاکٹر جاوید جمیل
 
ہے یہ بہتر کہ اکیلے ہمیں رہ جانے دو
خاک گزرے گی جو مل بیٹھیں گے دیوانے دو
 
چند بوندیں بھی چھلک جائیں گی آواز کے ساتھ
جب کسی بزم میں ٹکرائیں گے پیمانے دو
 
اس سے پہلے کہ جھلس جائے کڑی دھوپ میں یہ
اپنی زلفیں مرے چہرے پہ بکھر جانے دو
 
لال قلعہ پہ  تو پھہرایا ترنگا جھنڈا
ملک والو! اسے ذہنوں پہ بھی پھہرانے دو
 
صرف سائل کی نہیں تیری بھی عزت رہتی
کیا بگڑ جاتا جو دے دیتا اسے آنے دو
 
ان کو کیا علم کہ اسلام ہے دنیا کے لئے
شیخ فرماتے ہیں جو کچھ انھیں فرمانے دو
 
پھل کے بننے میں ہے جاوید ضروری یہ بھی
پھول کا کام ہی مرجھانا ہے مرجھانے دو
 
*********************
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 497