donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* مرے سینے میں دھڑکتا دل_ بےقرار ہوت *
غزل
 از ڈاکٹر جاوید جمیل
 
مرے سینے میں دھڑکتا دل_ بےقرار ہوتا
مجھے کاش آج تک بھی ترا انتظار ہوتا
 
تری یاد پر ہے جیسا مرا دائمی تسلط
تری دل کی دھڑکنوں پر یونہی اختیار ہوتا
 
مرا پیار پیار کب ہے، مرا پیار تو جنوں ہے
نہ جنوں سہی کم از کم ترا پیار پیار ہوتا
 
غلطی نہ تھی مری ہی، غلطی تھی کچھ تری بھی
تو جو شرمسار ہوتا، میں بھی شرمسار ہوتا
 
چڑھی دھوپ مشکلوں کی توجھلس گئی پلوں میں
بھلا ایسی دوستی پر کسے اعتبار ہوتا
 *******
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 514