rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Mansoor Khushtar
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* جہاں سے اب گذرنا چاہتے ہیں *

جہاں سے اب گذرنا چاہتے ہیں
کہ ہم جنت میں رہنا چاہتے ہیں

تو جہ آپ فرمائیں اگر تو
کچھ ہم بھی عرض کرنا چاہتے ہیں

ذرا تیغِ نگہ کو تیز کیجئے
کہ ہم بھی کچھ تڑپنا چاہتے ہیں

چھپا رکھی جو ہے وہ جام دیدے
وہی پی کر بہکنا چاہتے ہیں

مزہ عاشق کو اس میں بھی ہے ملتا
جفا ئیں تیری سہنا چاہتے ہیں

ہوئے ہیں تنگ اس دنیا سے ایسے
بلا تا خیر مرنا چاہتے ہیں

ورق خوشترؔ کتابِ زندگی کا
کوئی تازہ الٹنا چاہتے ہیں

**************

 

 
Comments


Login

You are Visitor Number : 533