rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Mansoor Khushtar
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* وہ میری بیکسی پر کاش تھوڑا مہرباں  *

وہ میری بیکسی پر کاش تھوڑا مہرباں ہوتا
پریشاں حال ہوکر میں یقینا شادماں ہوتا

یقیں کرکہ میں تجھ سے بھی زیادہ چاہتا اسکو
ٍجو میرے جیسا تیرا اور کوئی قدر داں ہوتا

کھرے کھوٹے کا اندازہ تجھے بھی کچھ تولگ جاتا
رقیبِ روسیہ کا جو لیا گرامتحاں ہوتا

سراغِ منزل محبوب کا مجھکو پتہ کچھ اس سے مل جا تا
رہِ الفت پہ پائوں کا اگر اس کے نشاں ہوتا

نہ ہوتا دشت و ویرانہ اگر صحرائے بے پایا ں
غریب عاشق کوئی آباد پھر جا کر کہاں ہوتا

ہے ربط بلبل وگل ہی سے قائم اس میں رعنائی
وگرنہ رنگ وبود دلکشی سے خالی ہر اک گلستاں ہوتا

مکاں اس دَوْر میں پاکٹ ایڈیشن بنتے ہیں خوشترؔ
کوئی دالان، آنگن اور کوئی سائباں ہوتا

****************

 

 
Comments


Login

You are Visitor Number : 506