donateplease
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Monazir Ashiq Harganvi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* بھونروں کی انجمن تھی چمن میں سجی ہ *
کہمن

مناظر عاشق ہرگانوی

بھونرا اور محبت

 منظر:

بھونروں کی انجمن تھی چمن میں سجی ہوئی
غنچہ چٹک رہا تھا کلی تھی کھلی ہوئی
باتیں چلی ہوئی تھیں گلوں کے شباب کی
آنکھوں میں زندگی کی تمنا بھری ہوئی
ہر پھول کی تھی باغ میں قسمت صلیب پر
شہوت کدے میں جیسے ہو لڑکی گھری ہوئی
موسم بکھر رہا ہے تھا بہارِ حیات کا
چلتی ہوئی تھی سانس مگر تھی گھٹی ہوئی

 کہمن:

پاکیزگی ہی عشق کا حاصل ہے دوستو
گریہ نہیں تو کچھ بھی نہیں ہے حیات میں
تمہید کائنات کی لفظِ وفا ہے بس
ورنہ رکھا ہی کیا ہے محبت کی بات میں
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 270