rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Mushtaque Darbhangwi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* غموں کا بوجھ لئے ، بارِ حادثات لئے *

غموں کا بوجھ لئے ، بارِ حادثات لئے
میں جی رہا ہوں مسائل کی کائنات لئے

گھرے ہوئے ہیں زمانے کی مشکلوں میں ہم
تم آ بھی جائو کوئی صورتِ نجات لئے

عجیب یہ بھی ترا طرزِ بے نیازی ہے
کہ تو ہے میرے تئیں رنگِ التفات لئے

کرے گا کیسے وہ مشکل کشائی میری بھلا
پڑا ہوا ہے جو خود اپنی مشکلات لئے

سمجھ نہ پائے کبھی ایک دوسرے کی بات
تم اپنی بات لئے ہو ہم اپنی بات لئے

میں اُن سے کھل کے کبھی گفتگو نہ کرپایا
ملے وہ جب بھی تو رسمِ تکلفات لئے

کہاں کہاں سے نہ گزرا جہاں میں میں مشتاقؔ
خیال و فکر کی تصویر اپنے ساتھ لئے

*************

 
Comments


Login

You are Visitor Number : 263