donateplease
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Mushtaque Darbhangwi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* جو نہ ہو مثالِ پیکاں وہ نظر نظر نہی *
جو نہ ہو مثالِ پیکاں وہ نظر نظر نہیں ہے
کوئی زخم ہو نہ جس میں وہ جگر جگر نہیں ہے

میرا حال کون پوچھے میرا درد کون جانے
جو سمجھتا میرے غم کو وہی چارہ گر نہیں ہے

کوئی کہہ سکے تو کہہ دے یہ مسافروں سے جاکر 
جو نہ دے کسی کو سایہ وہ شجر شجر نہیں ہے

وہی عزم ہے سفر کا ، وہی میں ، وہی ہے منزل
وہی راستہ ہے لیکن کوئی ہم سفر نہیں ہے

وہ ہے تیری خوش نصیبی یہ ہے میری بد نصیبی
تیرا گھر ہے قصر شیریں میرا کوئی گھر نہیں ہے

جو مسافرانِ منزل کو دکھائے راہ یارو
وہی اک چراغ روشن سرِ رہ گزر نہیں ہے

جسے خوف ہو خدا کا ڈرے کیوں کسی سے مشتاقؔ
ڈرے گا وہی جہاں سے جسے رب کا ڈر نہیں ہے
**************
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 249