donateplease
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Mushtaque Darbhangwi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* وہ حسیں اور میں جواں ٹھہرا *
وہ حسیں اور میں جواں ٹھہرا
خوب عنوانِ داستاں ٹھہرا

مجھ کو اِس رنگ و بو کی دنیا میں
کیا پتہ کون کب کہاں ٹھہرا

ہوگئے سارے بام و در روشن
میرے گھر جب وہ مہرباں ٹھہرا

منزلِ شوق بن گئی وہ جگہ
راہ میں میں جہاں جہاں ٹھہرا

شیش محلوں کے خواب کیا دیکھوں
میں تو مجبور و ناتواں ٹھہرا

اُس کی مانند میری راہوں میں
کب کوئی مثلِ کہکشاں ٹھہرا

چلتے چلتے ٹھہر گئے ہم لوگ
قافلہ وقت کا کہاں ٹھہرا؟

کیا غرض مجھ کو لوحِ مرقد سے
میں تو بے نام و بے نشاں ٹھہرا

تو عیادت کو آ بھی جا اے دوست
تیرا مشتاقؔ نیم جاں ٹھہرا
**************
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 275