rishta online logo
newsletter
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Mushtaque Darbhangwi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* پیار کی خوشبو سے تھا مہکا ہوا سارا  *
پیار کی خوشبو سے تھا مہکا ہوا سارا بدن
میری آنکھوں میں ہے رقصاں آج بھی اُس کا بدن

کام جو انجام دیتے ہیں عبادت کی طرح
ہے مقدس ایسے لوگوں کا تھکا ماندہ بدن

بند کمرے میں ہوا اہلِ ہوس کا وہ شکار
سننے والا کون تھا فریاد کیا کرتا بدن

جب چمن کی سیر کو آیا پری پیکر کوئی
گل بدامانِ بہاراں بن گیا اُس کا بدن

روح افزا ہے جمال اُس غیرت ناہید کا
پیار آئے کیوں نہ اُس کا دیکھ کر پیارا بدن

آدمی کی آدمیت پر نظر میری رہی
میں بھلا کیوں دیکھتا گورا بدن کالا بدن

ہے یہی مشتاقؔ پونجی ہم غریبوں کے لئے
ہاتھ محنت کے ہمارے اور مشقت کا بدن
***************
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 299