rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Mushtaque Darbhangwi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* دیکھئے کیا واقعہ پھر رونما ہونے ک  *
دیکھئے کیا واقعہ پھر رونما ہونے کو ہے
اب رئیسِ شہر پابندِ وفا ہونے کو ہے

دوستوں کی بدگمانی دشمنوں کی تلخیاں
کہہ رہی ہے خامشی جنگِ انا ہونے کو ہے

آسماں پر مائلِ پرواز جو برسوں رہا
پست اُس شہباز کا اب حوصلہ ہونے کو ہے

ہوگئے تم تو غمِ دنیا کے ہاتھوں جاں بلب
کیا مری بھی زندگی بے آسرا ہونے کو ہے؟

پھر چمکتی ہیں گھٹا کی گود میں چنگاریاں
لگ رہا ہے پھر کوئی محشر بپا ہونے کو ہے

قاتلانِ وقت کی اک بھیڑ ہے چاروں طرف
جانے کیا شہرِ اماں میں حادثہ ہونے کو ہے

وقت کی سرخی ہمیں مشتاقؔ دیتی ہے پیام
ساری دنیا ایک دن راحت فزا ہونے کو ہے
*****************
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 225