donateplease
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Syed Iqbal Rizvi Sharib
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* بے جا سی حسرتوں نے تماشہ کیا مجھے *

 غزل


بے جا سی حسرتوں نے تماشہ  کیا مجھے 
سب نے حقیر جان کے رسوا کیا مجھے

 

جب دسترس میں تھا تو نہ کی لطف کی نگاہ 
پھر ساری عمر لوگوں سے پوچھا کیا مجھے
 
 
اس دور میں دروغ نے پایا  ہے کیا عروج 
گو حق پہ  میں تھا جھوٹوں نے جھوٹا کیا مجھے
 
 
اکثر جو حکمراں ہیں وہ موذی سرشت ہیں 
مالک یہ کیسے دور میں پیدا کیا مجھے
 
 
حالات نے وجود مرا مسخ کر دیا 
وہ میرے ساتھ ہو کے بھی ڈھونڈا کیا مجھے
 
 
 اب کچھ بھی میری ذات میں ذاتی نہیں رہا 
سائبر کے اس  جہاں نے   برہنہ کیا مجھے

شارب عجب سکون ہے جب سے  سنا ہے یہ 
 ٹھڈّی  پہ دھر  کے ہاتھ وہ سوچا کیا مجھے


ٌٌٌٌٌٌٌٌٌٌٌ۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸
 

 
Comments


Login

You are Visitor Number : 99