donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Anwar Jalalpuri
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* پرایا کون ہے اور کون اپنا سب بھلا د *

پرایا کون ہے اور کون اپنا سب بھلا دیں گے 

متاع زندگانی ایک دن ہم بھی لٹا دیں گے 

تم اپنے سامنے کی بھیڑ سے ہو کر گزر جاؤ 

کہ آگے والے تو ہرگز نہ تم کو راستہ دیں گے 

جلائے ہیں دیئے تو پھر ہواؤں پر نظر رکھو 

یہ جھونکے ایک پل میں سب چراغوں کو بجھا دیں گے 

کوئی پوچھے گا جس دن واقعی یہ زندگی کیا ہے 

زمیں سے ایک مٹھی خاک لے کر ہم اڑا دیں گے 

گلہ شکوہ حسد کینہ کے تحفے میری قسمت ہیں 

مرے احباب اب اس سے زیادہ اور کیا دیں گے 

مسلسل دھوپ میں چلنا چراغوں کی طرح جلنا 

یہ ہنگامے تو مجھ کو وقت سے پہلے تھکا دیں گے 

اگر تم آسماں پر جا رہے ہو شوق سے جاؤ 

مرے نقش قدم آگے کی منزل کا پتا دیں گے 


۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸

 
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 408