donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Kausar Perween
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* فسانہ ختم ہوا سعیٔ جستجو کیا ہے *
غزل

فسانہ ختم ہوا سعیٔ جستجو کیا ہے
بوقتِ نزع نہ پوچھو کہ آرزو کیا ہے

میں اپنی دوست جو ٹھہروں تو پھر عدو کیا ہے
ہر ایک شے پہ تصرف ہو ایک تو کیا ہے

ہزار پردے میں اے چھپ کے بیٹھنے والے
یہ روشنی سی مرے دل کے چار سو کیا ہے

کبھی تو مجھ کو بھی اپنا خیال آجائے
تو ہی بتا کہ یہ ہر لمحہ تو ہی تو کیا ہے

نہ کوئی عکس نہ صورت نہ کوئی نقش و نگار
نظر جو آتا ہے مجھ کو وہ کو بہ کو کیا ہے

نظر اٹھے تو اٹھے یوں کہ بول اٹھے منظر
نگاہِ شوق بتا تیری آرزو کیا ہے

تری نگاہ نے جب مست کردیا کوثر
یہ اہتمامِ خم و بادہ و سبو کیا ہے

کوثر پروین کوثر

2B, Kimber Street
2nd Floor
Kolkata-700017
Mob: 9339784378
Ph: (033)22866337
بہ شکریہ جانِ غزل مرتب مشتاق دربھنگوی
+++

 
Comments


Login

You are Visitor Number : 330