donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Anwar Jalalpuri
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* میں ہر بے جان حرف و لفظ کو گویا بنات&# *

میں ہر بے جان حرف و لفظ کو گویا بناتا ہوں 

کہ اپنے فن سے پتھر کو بھی آئینہ بناتا ہوں 

میں انساں ہوں مرا رشتہ براہیمؔ اور آزرؔ سے 

کبھی مندر کلیسا اور کبھی کعبہ بناتا ہوں 

مری فطرت کسی کا بھی تعاون لے نہیں سکتی 

عمارت اپنے غم خانے کی میں تنہا بناتا ہوں 

نہ جانے کیوں ادھوری ہی مجھے تصویر جچتی ہے 

میں کاغذ ہاتھ میں لےکر فقط چہرہ بناتا ہوں 

مری خواہش کا کوئی گھر خدا معلوم کب ہوگا 

ابھی تو ذہن کے پردے پہ بس نقشہ بناتا ہوں 

میں اپنے ساتھ رکھتا ہوں سدا اخلاق کا پارس 

اسی پتھر سے مٹی چھو کے میں سونا بناتا ہوں 

main har be-jaan harf-o-lafz ko goya banata huu.n

ki apne fan se patthar ko bhī ā.īna banātā huuñ 

maiñ insāñ huuñ mirā rishta 'brāhīm' aur 'āzar' se 

kabhī mandir kalīsā aur kabhī ka.aba banātā huuñ 

mirī fitrat kisī kā bhī ta.āvun le nahīñ saktī 

imārat apne ġham-ḳhāne kī maiñ tanhā banātā huuñ 

na jaane kyuuñ adhūrī hī mujhe tasvīr jachtī hai 

maiñ kāġhaz haath meñ lekar faqat chehra banātā huuñ 

mirī ḳhvāhish kā koī ghar ḳhudā ma.alūm kab hogā 

abhī to zehn ke parde pe bas naqsha banātā huuñ 

maiñ apne saath rakhtā huuñ sadā aḳhlāq kā pāras 

isī patthar se miTTī chhū ke maiñ sonā banātā huuñ 

۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸


 

 
Comments


Login

You are Visitor Number : 232