donateplease
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Monazir Ashiq Harganvi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* ایک دو شیزہ چمن میں ہے بے حجاب و بے خ& *
کہمن

مناظر عاشق ہرگانوی

بے حجابی

 منظر:

ایک دو شیزہ چمن میں ہے بے حجاب و بے خطر
پیڑ کے سائے میں بیٹھی کر رہی تھی انتظار
سامنے ننگی سڑک سے آئے کچھ عاشق مزاج
جن کے ہونٹوں پر نوا تھی، جن کی آنکھوں میں شرر
دھجیاں اُڑنے لگیں تنہائیوں کے جسم کی
شوکتِ بے پردگی ہونے لگی تھی بے قرار
کس کو اب آواز دے کس کو پکارے بے بسی
ساڑیاں عصمت کے تن کی ہو رہی تھیں تار تار

 کہمن: 

فکر اپنی چاہئے اپنی فراست چاہئے
آدمی کے ذہن کے اندر شرافت چاہئے
پاک دامانی سلامت گر رہی تو سب رہا
اپنی کرتوتوں پہ انساں کو خجالت چاہئے
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 250