donateplease
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Mushtaque Darbhangwi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* ظالم کہیں نہ پھونک دے گھر جاگتے رہ *
ظالم کہیں نہ پھونک دے گھر جاگتے رہیں
ہم ہوکے آج سینہ سپر جاگتے رہیں

شعلوں میں گھِر نہ جائے کہیں گائوں کا سکوت
جس حال میں ہو تا بہ سحر جاگتے رہیں

ہر لمحہ کوندتی ہیں تعصب کی بجلیاں
لمحہ بہ لمحہ اہلِ نظر جاگتے رہیں

سونا جو چاہتے ہیں تو سوجائیں قافلے
لیکن چراغِ راہ گزر جاگتے رہیں

محشر بپا نہ کردے کہیں کوئی شرپسند
جب تک نہ ہو طلوعِ سحر جاگتے رہیں

بے خوف ہوکے سوئیں نہ کیوں لوگ شہر میں
راتوں کے پاسبان اگر جاگتے رہیں

غفلت میں جو پڑے ہیں اُنہیں کردو ہوشیار
آواز دے رہا ہے گجر جاگتے رہیں

سوجائیں گے تو فائدہ دشمن اٹھائے گا
ہے ہم پہ دشمنوں کی نظر جاگتے رہیں

مشتاقؔ یہ پکار کے کہہ دو کہ ساری رات
لے کر چراغ اہلِ سفر جاگتے رہیں
****************
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 261