rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Mushtaque Darbhangwi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* مجھ تک تری نظر کا پیغام تک نہ آیا *
مجھ تک تری نظر کا پیغام تک نہ آیا
اک پل دلِ حزیں کو آرام تک نہ آیا

اہلِ وفا پہ برسے راہِ وفا میں پتھر
جو بے وفا تھا اُس پر الزام تک نہ آیا

اُس راہِ آرزو سے گزری حیات میری
جس راہ میں خوشی کا ہنگام تک نہ آیا

اک مسئلہ بنا ہے صیاد کی اَنا کا
وہ پَر بُریدہ طائر جو دام تک نہ آیا

دنیائے دل لٹاکے پچھتا رہا ہوں لیکن
آغاز میں خیالِ انجام تک نہ آیا

جس نام سے تھے روشن دل کے تمام گوشے
مشتاقؔ کے لبوں پر وہ نام تک نہ آیا

**************
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 261