rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Mushtaque Darbhangwi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* اہلِ زر کی گزارش نہ خالی گئی *
اہلِ زر کی گزارش نہ خالی گئی
مفلسوں کی ہی فریاد ٹالی گئی

اُس حکومت سے امید انصاف کیا
ظلم پر جس کی بنیاد ڈالی گئی

جگمگانے لگی کہکشاں ہر طرف
روشنی جب فضا میں اچھالی گئی

تھا وہ سقراط ہنستے ہوئے پی گیا
سامنے زہر کی جب پیالی گئی

حکمِ سجدہ ہوا قدسیوں کے لئے
روح آدم کے تن میں جو ڈالی گئی

میں نقیبِ محبت زمانے میں تھا
مجھ سے دل میں کدورت نہ پالی گئی

تھا خدا کی نگاہوں میں معصوم وہ
پائوں میں جس کے زنجیر ڈالی گئی

کیا شباب اُن پہ آیا عذاب آگیا
اوڑھنی بھی نہ تن پر سنبھالی گئی

خواب کے در جو مشتاقؔ کھولے گئے
ہر حقیقت نظر سے چھپالی گئی
*****************
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 224