donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* صبیح ساعتوں کی ایک نظم *
صبیح ساعتوں کی ایک نظم

خوبصورت تتلیو!
اُڑتی رہو، اڑتی رہو
تم اُڑو تو پھول ہنس دے
باغ جھومے 
اور موسم مسکرائے
بلبلوں کا گیت، کوئل کی صدا، چڑیوں کا شور
سب دھنک رنگوں میں ایسے جگمگائیں
خوشبوں میں خواب گونجے
آسماں سے دوستی کرنے کو جس کا جی کرے
وہ پرندہ
بھول کر یادیں پرانی، بازوئوں میں پھر نئی پرواز بھرکے
اُڑ چلے تازہ اُمنگوں کی طرف
ہاں تم اُڑو ۔ اُڑتی رہو
اے خوب صورت تتلیو!!
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 377