donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* گماں چھپا ہے یقین کی کسی گلی میں کہ *
غزل

گماں چھپا ہے یقین کی کسی گلی میں کہیں 
میں اس کو شہر میں ڈھونڈوں جو ہے مجھی میں کہیں
تو اک سکوت مسلسل، میں احترام ترا
مگر جو چیخ پڑوں یوں ہی بے خود ی میں کہیں
لہو کی آگ سے روشن یوں شب تمام ہوئی
سحر سمجھائی نہ دے اب تو روشنی میں کہیں
جبیں جو خم نہ ہوئی، اے خدا مرا کیا دوش؟
سجود گم ہوئے جا کر نماز ہی میں کہیں
اسی کو ڈھونڈتے رہنا جو میرے جیسا ہے
دکھائی جو نہیں دیتا مگر مجھی میں کہیں
+++
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 393