donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* دل کے آسیب کا دنیا سے گِلہ ہم نے کیا *
غزل

دل کے آسیب کا دنیا سے گِلہ ہم نے کیا
شوق سے خود کو گرفتارِ بلا ہم نے کیا
ایک ہی خواب تو موتی کی طرح آنکھ میں تھا
خاکِ دل! توہی بتا اس کا بھی کیا ہم نے کیا
جب دعا دی اسے، الفاظ سب اپنے برتے
اس بھلائی میں یہ تھوڑا سا بُرا ہم نے کیا
یاد سی چیز کوئی لا کے شفق پر رکھ دی
شام کو شام سے اس طرح جُدا ہم نے کیا
کاش اک غم بھی ہو ایسا کہ کبھی جس سے کہیں
دل کی زنجیر سے، جا تجھ کو رِہا ہم نے کیا
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 434