donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* الفاظ سے کھیلو،کبھی آوازسے کھیلو *
غزل

الفاظ سے کھیلو،کبھی آوازسے کھیلو
یادوںکاکھنڈرہے، اسی اندازسے کھیلو
آنکھ کے یہ رشتے کبھی افشانہیں ہوتے
اترومرے اندر، مرے کچھ رازسے کھیلو
کب تک یہ دھندلکوںکی تھکن ڈھوتے رہوگے
ڈھونڈوکوئی چہرہ، نگہہِ نازسے کھیلو
گمنام بہاروںکی تمنانہیں اچھی
پیڑوںپہ سجی فصلِ خزاں سازسے کھیلو
تنہائی سے بہترکوئی ساتھی نہیں ہوتا
ٹکراکے جوپلٹے اسی آوازسے کھیلو
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 400