donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* وہ دن کوعیاں ہوگامگررات رہے گی *
غزل

وہ دن کوعیاں ہوگامگررات رہے گی
اُس شخص سے پھرکُھل کے ملاقات رہے گی
اِس بارکوئی شہرمیںچھپرنہیںاپنا
اس باربڑی زورکی برسات رہے گی
گزراہوںگھنی شاخوںسے اس سارے سفرمیں
بے برگ درختوںمیںمری بات رہے گی
یخ بستہ نظرآئے گاوہ لوٹنے والا
سینے میںمگرگرمی ٔجذبات رہے گی
بھٹکاہوںبہت پیاس کے صحرائوںمیںشاہدؔ
اب بارشوںکی زدپہ مری ذات رہے گی
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 424