donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* قصوریہ ہے کہ لکھتاہوںبارباروہی *
غزل

قصوریہ ہے کہ لکھتاہوںبارباروہی
وہ حالِ دل ہے مراتوہزارباروہی!
وہ زردخوشبویہیںپرکہیںکھڑی ہوگی!
یہ کس نے چھیڑدیاقصۂ بہاروہی؟
نے چھیڑدیاقصہ ٔ بہاروہی؟
یہاںکی مٹی مرے پائوںکیوںنہیں کستی؟
وہی دریچۂ جاناں،دیارِ یاروہی 
اسے کہ شہرصدامیں بھی ہے سکوںکتنا!
یہاںتوغنچہ بھی چٹکے توانتشاروہی
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 404