donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* غلط ہے سوچنا، ایسا بھی ہوگا *
غزل

غلط ہے سوچنا، ایسا بھی ہوگا 
کوئی دل ہے تو وہ دریا بھی ہوگا 
اُسے پانے سے پہلے کھو دیا ہے
اُسے کیا اس کا اندازہ بھی ہوگا 
زمانے کا بہانہ سچ نہیں ہے
کہیں کچھ فیصلہ اس کا بھی ہوگا
مجھے اتنے خطوط اس نے لکھے تھے
مجھے لگتا تھا ،وہ مجھ سا بھی ہوگا
وہ توڑا ہے جو اُس نے شیشہ دل
اُسی میں عکس اک اس کا بھی ہوگا
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 420