donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* روز و شب اس کا نشہ ہوں اب میں *
غزل

روز و شب اس کا نشہ ہوں اب میں
کس قدر خود سے جُدا ہوں اب میں
تم کہاں ڈھونڈ رہے ہو مجھ کو
لفظ تھا پہلے، صدا ہوں اب میں
اس قدر دور گیا اس کے لئے
آپ اپنے سے گھراہوں اب میں
ڈھونڈلے کوئی تو پورا کردے
کہیں تھوڑا سا بچا ہوں ہوں اب میں
خواب کے ہونٹوں پہ سچ لوٹ آیا
ایک آوارہ دعاء ہوں اب میں
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 388