donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* کوئی منظر نہ موسم سامنے ہے *
غزل

کوئی منظر نہ موسم سامنے ہے
مگر وہ ہے کہ ہردم سامنے ہے
محبت سر بلندی چاہتی ہے
پھر اک آنچل کا پرچم سامنے ہے
کہیں خوشبو، کہیں جھنکار سی ہے
وہی تو ہے جو پیہم سامنے ہے
مری آنکھوں سے کب اوجھل نہیں ہے
وہ اک لمحہ جو ہردم سامنے ہے
وہ کیا شئے تھی ،خطوں میں بولتی تھی
یہ کیا شئے ہے ،مجسم سامنے ہے
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 398