donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* سفر تمام ہو چکا ہے، اب اُسے نہ ڈھون *
غزل

سفر تمام ہو چکا ہے، اب اُسے نہ ڈھونڈئیے
غبارِ راہ بن کے بے سبب اُسے نہ ڈھونڈئیے
جنون شوق میں کسی سوال کا گزر کہاں
نوازشوں میں کیا ہوا غضب اُسے نہ ڈھونڈئیے
وہ سارے مسئلوں کا حل کسی گلی میں قید ہے
تمام شہر مسئلہ طلب ،اُسے نہ ڈھونڈئیے
تبسم اس حجاب کا ہے برق ریگ زار کی
سراب ہے، یہ رسمِ زیر لب ،اُسے نہ ڈھونڈئیے
جمیل ہر نئی سحر بذات خود اک آس ہے
کہیں بھی انتہا نہیں ہے، کب اُسے نہ ڈھونڈئیے
٭٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 421