donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* شہر ہمارا شہر تمہارا لگتا ہے *
غزل

شہر ہمارا شہر تمہارا لگتا ہے
دونوں کو ایک چہرہ پیارا لگتا ہے
کہتا ہے بے عکسی اچھی لگتی ہے
آئینے کے پیار کا مارا لگتا ہے
ابھی نہیں ،ممکن ہے بعد میں یاد آئو
صبح کا منظر شام کو پیارا لگتا ہے
مشکل ہے ہر بھیڑ میں شامل ہو جانا
اپنا جو بھی نام ہو پیارا لگتا ہے
یہ تو شاہدؔ اک مجبوری ہے ورنہ
کون کسی کو آنکھ کا تارا لگتا ہے
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 390