donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* لہو لہو سا، یہ چہرہ! گلاب دیکھوں گا *
غزل

لہو لہو سا، یہ چہرہ! گلاب دیکھوں گا
ترا وجود ہے ریشم تو خواب دیکھوں گا
تمہاری آنکھ سے تنہائی میں ٹپک لیٹتا
خبر جو ہوتی، کبھی یہ عذاب دیکھوں گا
سنا ہے، لوگ کہیں خود کو بھول آتے ہیں
مجھے بھی دیکھنے دو، میں بھی خواب دیکھوں گا
مجھے بھی خود کو بدلنا ہے اے مرے موسم!
کبھی قریب سے تیرا شباب دیکھوں گا
تمام عمر گذاری ہے کونپلوں کی طرح
میں زرد پتوں پہ اپنا حساب دیکھوں گا
 ۔۔۔
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 429