donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* پچھلی رُت تبسم سے بے خبر رہے چہرے *
غزل

پچھلی رُت تبسم سے بے خبر رہے چہرے
کونپلوں میں اُگتے ہیں اب مرے چہرے
میں بھی اپنے ماضی کے شہر سے پریشاں ہوں
درد میں چبھی آنکھیں ، کرب سے اَٹے چہرے
زندگی کے موسم کو ڈھونڈتے ہیں سڑکوں پر
خود سے بے خبر سے ہیں کچھ نئے نئے چہرے
لب سرابِ بے زاری، چشم خواب سے عاری
کس قدر ادھورے ہیں یہ سجے سجے چہرے
مجھ سے منسلک شاہد، کون سی تھی انگڑائی
میرا نام لے لے کر ٹوٹتے رہے چہرے
۔۔۔
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 452