donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* بارشیں زندان ، قیدی ہے جولائی *
غزل

بارشیں زندان ، قیدی ہے جولائی
اے مرے دل! تیرے جیسی ہے جولائی
درد کی شاخوں میں رم جھم جاگتی ہے
پتیوں کے ساتھ بجتی ہے جولائی
کوئلوں کو بھیج دیتی ہے سکھا کر
پھر مئی کو بھیج دیتی ہے سکھا کر
پھر مئی کا کام کرتی ہے جولائی
بادلوں میں بجلیوں کی رقص گاہیں
ساغروں میں آگ بھرتی ہے جولائی
کوہساروں جیسی یادوں کی چٹانیں
وادی دل میں بھٹکتی ہے جولائی
۔۔۔
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 383