donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* حبس ہے یا کرم مئی کا ہے *
غزل

حبس ہے یا کرم مئی کا ہے
یاد اُس کی علم مئی کا ہے
دھوپ، حدت، سراب  حبس، غبار
حوصلو! یہ حرم مئی کا ہے
ذہن میں نور ، راہ میں شعلے
ہر سفر بیش و کم مئی کا ہے
گل کہیں سرخ رو، ستمبر سا
زرد شاخوں پہ غم مئی کا ہے
دھیان میں رکھ دسمبروں کا نزول
یہاں ہر ہر قدم مئی کا ہے
۔۔۔۔
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 404