donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Shahid Jameel
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* اس کا قصّہ نقابیں کھینچ! *
غزل
				٭……شاہد جمیل

اس کا قصّہ نقابیں کھینچ!
خیمۂ خواب کی طنابیں کھینچ!
ہے عدو کو پڑھائی کا چسکا
وار کرنا ہے تو کتابیں کھینچ!
ریک پر رینگتی ہے خاموشی 
کوئی کہرام اٹھا شرابیں کھینچ!
بے حسی کی سڑک سلامت ہے
چل یہ جذبات کی جرابیں کھینچ!
پیٹھ پر گولیاں چلاتا جا!
سامنے سے مگر نہ قابیں کھینچ!
*******
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 388