donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Kaif Azimabadi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* مرے وجود کا جو ہر کھنگال کر لے جا *
غزل
کیف عظیم آبادی

 مرے وجود کا جو ہر کھنگال کر لے جا
 حصار جسم سے مجھ کو نکال کر لے جا
 بہت ملیں گے ابھی راہ میں نشیب و فراز
 تو جا رہا ہے تو خود کو سنبھال کر لے جا
 رُلا نہ دے کہیں رستے کی تجھ کو تاریکی
 خودی میں اپنی طبیعت کو ڈھال کر لے جا
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 1215