donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Kaif Azimabadi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* یونہی وقت اپنا وہ کھوتا رہا *
غزل
کیف عظیم آبادی

 یونہی وقت اپنا وہ کھوتا رہا
 گلابوں کو پتھر میں بوتا رہا
 خدا جانے سناٹا کس گھر کا تھا
 لپٹ کر مرے دل سے روتا رہا
 لباسِ مروت پہن کر سدا
 وہ لفظوں کے نشتر چبھوتا رہا
 میں اس کے بلکنے پہ کیا بولتا
 نمائش تھی رونے کی روتا رہا
 میں لفظوں کو دے کر دلو ں کی زباں
 غزل میں ہمیشہ سموتا رہا!!!
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 382