donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Kaif Azimabadi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* نقش واضح نہ نمایاں ہیں نشانات ابھ® *
غزل
کیف عظیم آبادی

نقش واضح نہ نمایاں ہیں نشانات ابھی
صید تشکیک ہے شاہین خیالات ابھی
پردۂ ساز میں پوشیدہ ہیں نغمات ابھی
لب خاموش میں بے چین ہے اک بات ابھی
ہیں جنوں خیر بہت سرد ہوا کے جھونکے
اور بھڑکے نہ کہیں شعلۂ جذبات ابھی
خوف تنہائی کا چبھنے لگا کانٹا دل میں
یوں تو روشن ہے بہت شمع ملاقات ابھی
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 351