donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Kaif Azimabadi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* مجھ کو یقیں نہیں یہ سبھوں کا قیاس ہ&# *
غزل
کیف عظیم آبادی

 مجھ کو یقیں نہیں یہ سبھوں کا قیاس ہے
 اس بے وفا کی آنکھ زمانہ شناس ہے
 اس کو بجھا سکے گا نہ آبِ حیات بھی
 یہ زندگی کی پیاس قیامت کی پیاس ہے
 یاد آرہی ہے آج تمہارے بدن کی آنچ
 خلوت ہے سوگوار دریچہ اداس ہے
 زخموں سے کچھ غرض نہ تبسم سے واسطہ
 دنیا! ترا مزاج ادا نا شناس ہے
 آنکھوں میں بس گیا ہے ترا رنگِ پیرہن
 پھیکا مری نظر میں گلوں کا لباس ہے
 دامن ہے چاک، ہاتھ میں پتھر ہے سر پہ خاک
 اس کی گلی میں جو بھی ہے وہ بد حواس ہے
 اس تیرگی شام شب غم کو کیا کروں
 ایسے میں آ بھی جائو بہت دل اداس ہے
٭٭٭
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 345