donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Karrar Noori
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* تیری ہی طرح ہمیں یاد آنے والا ہو *
تیری ہی طرح ہمیں یاد آنے والا ہو
تیرے سوا بھی کوئی تو ستانے والا ہو

ہر ایک صبح یہی دل میں ہُوک اٹھتی ہے
ہمیں بھی ناز سے کوئی جگانے والا ہو

کس امید میں گھر میں رہیں کہ جس گھر میں
نہ آنے والا ہو کوئی نہ جانے والا ہو

ہر اک سے نظریں ملائی ہیں، ان کے کوچے میں
کہ جیسے اب کوئی ہم کو بلانے والا ہو

ہے دوستوں کے لئے آئینہ نظر میری
نظر ملائے جو نظریں ملانے والا ہو

کہ جیسے کوئی بلا مجھ پہ آنے والی ہے
ہراس کہتا ہے کوئی بچانے والا ہو

ہمارے شہر میں کیا کیا سجے سجائے ہیں گھر
ہمارے گھر کو بھی کوئی سجانے والا ہو
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 337