donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Khalid Masood Khan
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* اس کے دل اندر ساڈی یاد کا روڑا رڑکا &# *
اس کے دل اندر ساڈی یاد کا روڑا رڑکا ہو گا
ماہئی بے آب کی مانند، تڑپا ہوگا، پھڑکا ہو گا

شور شرابا کھڑکا دڑکا سن کر اس نے گیس لگایا
یا بادل گرجا ہے اوپر، یا بیگم کا کڑکا ہو گا

سینے کی ہانڈی کے اندر وکھری ٹائیپ کی شوں شوں ہو گی
ساڈے دل کی دال کے اوپر اس کے حسن کا تڑکا ہو گا

خوش ہو کر دروازہ کھولا اگوں میٹر ریڈر نکلا
وہ سمجھی تھی آج بھی سامنے والا لڑکا ہو گا
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 325