donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Khamosh Dehlvi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* عمر جلوؤں میں بسر ہو یہ ضروری تو نہ *
عمر جلوؤں میں بسر ہو یہ ضروری تو نہیں
ہر شبِ غم کی سحر ہو یہ ضروری تو نہیں

چشمِ ساقی سے پیو یا لبِ ساغر سے پیو
بیخودی آٹھوں پہر ہو یہ ضروری تو نہیں

نیند تو درد کے بستر پہ بھی آ جاتی ہے
ان کی آغوش میں ہی سر ہو یہ ضروری تو نہیں

شیخ کرتا تو ہے مسجد میں خدا کو سجدے
اس کے سجدوں میں اثر ہو یہ ضروری تو نہیں

سب کی نظروں میں ہو ساقی یہ ضروری ہے مگر
سب پہ ساقی کی نظر ہو یہ ضروری تو نہیں

(خاموش دہلوی)
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 805